ایک سال سے باعث تنازع تین زرعی قوانین کو منسوخ کرنے کی راہ ہموار:انو راگ ٹھاکر

’سری نگر::وزیراعظم نریندرمودی کے حالیہ اہم ترین اعلان کے بعد چند روزبدھ کو مرکزی کابینہ نے تین متنازعہ زرعی قوانین کو منسوخ کرنے کے بل کو منظوری دے دی۔جے کے این ایس مانٹرینگ کے مطابق نئی دہلی میں سرکاری ذرائع نے بتایاکہ بدھ کے روز یہاں وزیراعظم مودی کی زیرصدارت مرکزی کابینہ کی ایک میٹنگ منعقد ہوئی،جس میں تین متنازعہ زرعی قوانین کو منسوخ کرنے کے بل کو منظوری دی گئی۔

زرعی قوانین کی منسوخی بل2021(Farm Laws Repeal Bill,2021)وزیر اعظم نریندر مودی کے کے اعلان کے چند دن بعد منظور کیا گیا تھا۔سرکاری ذرائع نے بتایاکہ اب کابینہ میں منظور شدہ ’زرعی قوانین کی منسوخی بل2021‘کواب پارلیمان کے ایوان زیریں یعنی لوک سبھا میں 29 نومبر سے شروع ہونے والے پارلیمنٹ کے آئندہ سرمائی اجلاس میں منظوری کیلئے پیش کیا جائے گا۔

مرکزی وزیر برائے اطلاعات و نشریات انوراگ ٹھاکر نے کابینہ میٹنگ کے بعد بتایا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں مرکزی کابینہ نے تین زرعی قوانین کو منسوخ کرنے کیلئے رسمی کارروائیاں مکمل کر لی ہیں۔میٹنگ کے بعدمختصر پریسبریفنگ کے دوران انوراگ، ٹھاکر نے کہاکہ آج، وزیر اعظم کی قیادت میں مرکزی کابینہ نے تین زرعی قوانین کو منسوخ کرنے کیلئے رسمی کارروائیاں مکمل کیں۔

پارلیمنٹ کے آئندہ اجلاس کے دوران ان تینوں قوانین کو واپس لینا ہماری ترجیح ہوگی۔خیال رہے ان تینوں متنازعہ قوانین کیخلاف کسان ایک سال سے سراپا احتجاج ہیں اورتین متنازعہ زعی قوانین کی منسوخی تقریباً 40 کسان یونینوں کے اہم مطالبات میں سے ایک ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں