چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے اجتماعی کوششوں کی ضرورت ہے: کانگریس

نئی دہلی، 7 فروری (یو این آئی) ملک کو درپیش اسٹریٹجک، سماجی، اقتصادی اور ثقافتی چیلنجوں سے نمٹنے کے لئے اجتماعی کوششوں پر زور دیتے ہوئے کانگریس نے پیر کو ایوان بالا راجیہ سبھا میں کہا کہ خسارے کو سرکاری اداروں کو بیچ کر پورا نہیں کیا جا سکتا اور نہ ہی ترقی کی جا سکتی ہے۔

صدر کے خطاب پر شکریہ کی تحریک پر بحث میں حصہ لیتے ہوئے ایوان میں کانگریس کے ڈپٹی لیڈر آنند شرما نے کہا کہ خطاب میں ملک کے پورے منظر نامے کی عکاسی ہونی چاہیئے۔ اس میں ملک کو درپیش چیلنجز، بحرانوں اور زمینی حقائق کی تفصیلات اور ان سے نمٹنے کے لیے پالیسیوں، حکمت عملیوں اور منصوبوں کا ذکر ہونا چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ خطاب میں ایسا کوئی ذکر نہیں ہے۔ اس میں صرف پچھلی اسکیموں کی تفصیلات ہیں۔

مسٹرشرما نے کہا کہ ملک ایک سنگین بحران سے گزر رہا ہے۔ ہر محاذ پر چیلنجز بڑھ رہے ہیں۔ معاشرے میں امیر اور غریب کے درمیان خلیج بڑھتی جا رہی ہے۔ ملک معاشی طور پر پیچھے جارہاہے۔ سرحدوں پر کشیدگی ہے اور سماج میں تعصب بڑھ رہا ہے۔

کانگریس کے رکن نے کہا کہ حکومت کو ان چیلنجوں اور بحرانوں کو قبول کرنا چاہئے اور ان سے نمٹنے کے لئے اجتماعی کوششیں شروع کرنی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ سرحد پر ایک لاکھ فوجی جمع ہیں، میڈیا جانتا ہے۔ حکومت اس حوالے سے پارلیمنٹ میں معلومات دے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں