استاذ کو ہنی ٹریپ میں پھنسانے والی خاتون گرفتار

بھیلواڑہ ، راجستھان کے بھیلواڑہ ضلع میں ہوٹل میں ساتھ گزارنے کا جھانسہ دے کر سرکاری استاذ کوہنی ٹریپ میں پھنسانے والی خاتون کو گنگا پور پولیس نے گرفتار کر لیا ہے۔

خاتون نے اپنے ساتھیوں کے ساتھ مل کر استاذ کو سنسان علاقہ میں لے جاکر پیٹا تھا۔ ساتھ ہی اس کا فحش ویڈیو بناکر اس سے پیسے اینٹھلئے تھے۔ مارچ کے مہینے میں استاذ کے ذریعے رپورٹ درج کروانے کے بعد سے ہی پولیس اس معاملے کی جانچ کر رہی تھی۔

تھانہ انچارج نریندر جین نے بتایا کہ 18مارچ کو کالا ڈونڈا کے رہائشی بھنور سنگھ چنڈاوت نے آشا جاٹ نام کی خاتون کے خلاف ہنی ٹریپ میں پھنسانے میں رپورٹ درج کروائی تھی ۔ رپورٹ میں بتایا کہ 16مارچ کو وہ بھیلواڑہ اسپتال میںداخل خالہ سے ملنے گیا تھا۔ اس دوران آشا جاٹ کا فون آیااور شہرکے ایک ہوٹل میں ساتھ میں رات گزارنے کا آفر دیا۔ بھنور سنگھ جب اپنی گاڑی لے کر آشا کے پاس چتوڑ گڑھ چوراہے پر گیا، وہاں آشا اور اس کے تین ساتھیوں نے اسے اغوا کر لیا اور سنسان علاقہ میں لے جاکر اس سے مارپیٹ کی ۔اس کے کپڑے اتار کر ویڈیو بنایا۔

اس کے بعد اس کے موبائل سے 76ہزار روپے ٹرانسفر کئے اور اس کی گاڑی کی چابی چھین لی اور خالی چیک پر سائن لے لیا۔ پولیس نے متاثرہ بھنور سنگھ کے ذریعے دئے گئے ثبوت کی بنا پر جانچ کرنے کے بعد پیر کو اسے گرفتار کر لیا اور عدالتی حراست میں جیل بھیج دیا۔

یو این آئی۔ خ س۔ ع ا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں