انوپ پور ویڈیو کے سلسلے میں کمل ناتھ کا حکو مت پر حملہ

بھوپال، مدھیہ پردیش کے سابق وزیر اعلیٰ کمل ناتھ نے انوپ پور ضلع کے بتائے جارہے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والے ایک ویڈیو کے تعلق سے حکومت پر حملہ کرتے ہوئے الزام لگایا ہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی قبائلیوں کو اذیت دینے میں سرفہرست پارٹی ہوتی جا رہی ہے مسٹر کمل ناتھ نے ایکس پر پوسٹ کرتے ہوئے لکھا کہ اس ویڈیو کو دیکھنے کے بعد نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔ انوپ پور ضلع میں، ایک قبائلی شخص کی لاش کے پاس، ایک بی جے پی لیڈر دوسرے قبائلی آدمی کو چپل سے پیٹتے ہوئے نظر آرہاہے۔ ریاست میں بی جے پی قبائلی مظالم کی پارٹی بنتی جا رہی ہے۔

انہوں نے ریاست کے کئی پرانے واقعات کا حوالہ دیتے ہوئے الزام لگایا کہ ہر بار قبائلیوں پر ظلم کرنے والا یا تو بی جے پی کا لیڈر ہوتا ہے یا اس سے جڑا کوئی شخص۔

سوشل میڈیا پر کل سے ایک ویڈیو وائرل ہو رہی ہے جس میں ایک شخص لاش کے پاس بیٹھے ایک بزرگ کو پیٹتا نظر آ رہا ہے۔ الزام ہے کہ مرنے والا بی جے پی سے وابستہ ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ دو بزرگ موٹر سائیکل پر کہیں جا رہے تھے کہ اس دوران نامعلوم گاڑی کی زد میں آ کر موٹر سائیکل پر سوار ایک شخص کی موت ہو گئی۔ اس کے بعد وہاں آئے والے لوگوں نے دوسرے بزرگ سے واقعہ کے بارے میں پوچھا، لیکن صدمے میں بزرگ کچھ نہ بتا سکا، جس کے بعد وہاں کھڑے ایک شخص نے اسے مارنا شروع کردیا۔

یہ معاملہ کل یوتھ کانگریس کے ریاستی صدر اور پارٹی کے قبائلی لیڈر ڈاکٹر وکرانت بھوریا نے اٹھایا۔ ڈاکٹر بھوریا نے ایکس پر یہ ویڈیو پوسٹ کرتے ہوئے الزام لگایا کہ حکومت قبائلی دوست ہونے کا ڈرامہ کر رہی ہے اور بی جے پی لیڈر اس طرح قبائلیوں پر ظلم کر رہے ہیں۔

یو این آئی۔ خ س۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں