بندرو کی ہلاکت انسایت کا قتل: فاروق عبداللہ

سرینگر / خبر اردو / نیشنل کانفرنس کے سرپرست اعلیٰ نے مکھن لال بندرو کی ہلاکت کو انسایت کا قتل قرار دیتے ہوئے کہاکہ اُس نے اپنی زندگی کو وادی کشمیر کے لوگوں کی خدمت کیلئے وقف کیا تھا۔

انہوں نے کہاکہ بندرو نے کشمیر سے ہجرت نہیں کی بلکہ غریبوں کی مدد کی خاطر وہ وادی کشمیر میں ہی رہے۔ اندرا نگر سرینگر میں بندرو کے اہلِ خانہ کے ساتھ ملاقات کے بعد حاشیہ پر نامہ نگاروں کے ساتھ بات چیت کے دوران نیشنل کانفرنس کے سرپرست اعلیٰ نے کہاکہ مکھن لال بندرو کی ہلاکت انسانیت سوز واقع ہے اور اس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔

انہوں نے کہاکہ بندرو ہمیشہ لوگوں کی خدمت کیلئے پیش پیش رہتے تھے۔ فاروق عبدا للہ کے مطابق مسلح شورش شروع ہونے کے بعد بندرو وادی کشمیر میں ہی رہے اور یہاں لوگوں کی خدمت میں اپنی زندگی وقف کی۔ انہوں نے کہاکہ بندرو کی ہلاکت سے اُنہیں دلی صدمہ پہنچا ہے اور اس واقعے کی ہر سطح پر مذمت ہو رہی ہے۔ نیشنل کانفرنس کے سرپرست اعلیٰ کا مزید کہنا تھا کہ اس طرح کے واقعات سے کشمیریت بدنام ہو رہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں