نوجوان سومو ڈرائیور کی ہلاکت قابل مذمت

صدرِ جموں وکشمیر نیشنل کانفرنس ڈاکٹر فاروق عبداللہ اور نائب صدر عمر عبداللہ نے جمعرات کی شب فورسز کی فائرنگ سے لارنو اننت ناگ کے نوجوان سومو ڈرائیور کی ہلاکت کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے اور واقعہ تحقیقات کے علاوہ خاطیوں کو قرار واقعی سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مہلوک پرویز احمد کی گاڑی پر اندھا دھند فائرنگ کی وجہ یہ بتائی گئی کہ اُس نے ناکے پر گاڑی نہیں روکی۔ اُن کا کہنا تھا کہ سیکورٹی ہائی الرٹ اس طرح بندوقوں کے دہانے کھولنے کی وجہ نہیں بن سکتی ہے۔ فورسز کے اعلیٰ حکام کو اس بات کو یقینی بنانے کی ضرورت ہے کہ حالات کو مزید ابتر نہ بنایا جائے اور سیکورٹی ہائی الرٹ کے دوران ایس او پیز پر مکمل کی مکمل عمل آوری کی جائے۔ دونوں لیڈران نے کہا کہ پرویز احمد بوکڈا ایک انتہائی غریب گھرانے سے تعلق رکھتا اور اپنے اہل خانہ کا واحد کماؤ تھا، مہلوک نوجوان کے پسماندگان میں 2معصوم بچیاں بھی شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ واقعہ کی تحقیقات اور خاطیوں کو قانون کے مطابق سزا دینے کے علاوہ حکومت سے اپیل کی کہ مہلوک نوجوان کے اہل خانہ میں کو ایک سرکاری نوکری اور بھر پور مالی امداد کی جائے۔ پارٹی جنرل سکریٹری حاجی علی محمد ساگر، رکن پارلیمان جسٹس (ر) حسنین مسعودی، جنوبی زون صدر ڈاکٹر بشیر احمد ویری، سینئر لیڈران سکینہ ایتو، الطاف احمد کلو، ایڈوکیٹ عبدالمجید لارمی، غلام نبی بٹ اڑگامی، ترجمان عمران نبی ڈار، پیر محمد حسین،ایڈوکیٹ ریاض احمد خان، سید توقیر احمد، ایڈوکیٹ عباس اور دیگر لیڈران نے بھی پرویز احمد کی ہلاکت کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں