وادی کشمیر میں خشک موسم کے بیچ درجہ حرارت میں گراوٹ کا سلسلہ جاری

بازاروں میں گرم ملبوسات کے ساتھ ساتھ کانگڑیوں کی خریداری جوبن پر

سر ینگر:وادی کشمیر میں خشک موسم کے بیچ درجہ حرارت میں گراوٹ کا سلسلہ جاری ہے جبکہ شمال وجنوب میں درجہ حرارت نکتہ انجماد سے گرجانے کے باعث میدانی علاقے بھی سردی کی شدیدلپیٹ میں آگئے ہیں۔محکمہ موسمیات کے مطابق سردی کی لہر16 نومبر تک برقرار رہ سکتی ہے جس کے بعد برفباری اور بارشیں ہونے سے اس صورتحال میں تبدیلی کا امکان ہے

وادی کشمیر میں خشک موسم کے بیچ سردی کی شدت میں بتدریج اضافہ درج ہو رہا ہے جس نے اہلیان وادی کو موسم خزاں میں ہی سرما کے جیسے حالات سے دو چار کر دیا ہے۔ادھر محکمہ موسمیات کے ایک ترجمان کے مطابق وادی میں 16 نومبر تک موسم مجموعی طور پر خشک رہنے کا امکان ہے۔

انہوں نے بتایا کہ وادی میں مطلع صاف رہنے کے باعث شبانہ درجہ حرارت میں کمی واقع ہو رہی ہے۔ادھر موسم سرما کے پیش نظربازاروں میں لوگوں کا کافی رش دیکھنے کو مل رہا ہے جس دوران لوگوں کی بھاری تعداد گرم ملبوسات کے ساتھ ساتھ کانگڑیوں کی خریداری کررہے ہیں۔ دیہی علاقوں کے لوگ موسم سرما کی تیاریوں میں مصروف ہیں یہاں کے لوگ سیب کے درختوں کی شاخ تراشی کرکے شاخوں کو جمع کرتے ہیں جس کے بعد جلا کر ان سے کوئلہ حاصل کرتے ہیں۔بازاروں میں جگہ جگہ چھاپڑی فروشوں نے چھاپڑی لگائی ہیں جن پر گرم ملبوسات،کمبل اور کانگڑیاں سجای گئی ہیں اور لوگ موسم سرما کی آمد کی تیاریوں میں خریداری کررہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں