کولگام شبانہ مسلح تصادم شیراز مولوی اور یاور بٹ کی ہلاکت پر اختتا م پذ یر

ؓبمنہ جھڑ پ میں عامر ریاض مارا گیا۔ مہلوک جنگجو شہریوں کونشانہ بنانے اور تخریبی سرگرمیوں میں مطلوب تھے۔ وجے کمار

سر ینگر:کولگام ضلع کے چانسر چولگام علاقہ میں سیکورٹی فورسز کیساتھ شبانہ مسلح تصادم حزب المجاہدین کے ضلع کمانڈر شیراز مولوی اور اسکے ساتھ یاور بٹ کی ہلاکت پر اختتا م پذ یر ہوا۔

انسپکٹر جنرل آف پولیس وجے کمار نے بتایا کہ مہلوک جنگجو کالعدم تنظیم حزب کے ساتھ وابستہ تھے اور وہ سیکورٹی فورسز پر حملوں، عام شہریوں کو تشدد کا نشانہ بنانے کی کارروائیوں اور دیگر تخریبی سرگرمیوں میں قانون نافذ کرنے والے ادارے کو انتہائی مطلوب تھے۔

ادھر بمنہ سرینگر مین مار ے گئے جنگجو کی شناخت عامر ریاض ساکن کھر یو کے بطور ہوئی ہے جو غزوۃ الہند سے وابستہ تھا اس بارے میں وجے کمار کا کہنا تھا کہ یہاں ہلاک ہونے والا جنگجو لیتہ پورہ حملے کے ایک ملزم کا رشتہ دار تھا۔

سی این ایس کے مطابق جنگجوؤں کی موجودگی سے متعلق مصدقہ اطلاع ملنے پر ایس اوجی،9آر آراوربٹالین18سی آر پی ایف نے دوپہرکے وقت چانسر چولگام کولگام کومحاصرے میں لیکر جنگجومخالف آپریشن شروع کیا۔

جمعرات کی شام دیر گئے پولیس ترجمان نے اپنے آفیشل ٹویٹر ہینڈل پرکہا کہ چولگام کولگام علاقے میں ملی ٹینٹوں اور حفاظتی عملے کے درمیان جاری جھڑپ میں ایک ملی ٹینٹ مارا گیا۔ جاں بحق جنگجو کی شناخت یاور بٹ ولد بشیر احمد ساکن پانی پورہ کے طور پر کی گئی ہے۔

یاور 25مارچ2021کو ملی ٹینٹوں کی صف میں شامل ہوا تھا۔ پولیس نے بتایا کہ گاؤں کی ناکہ بندی کردی گئی ہے اور شام دیر گئے تک یہاں طرفین کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ جاری تھا جس کے بعد گاؤں میں روشنیوں کا انتظام کرلیا گیا ہے اور جنگجو مخالف آپریشن جمعہ کی صبح تک ملتوی کردیا گیا جمعہ کی علی الصبح ایک مرتبہ پھر جنگجو مخالف آ پریشن شروع کیا گیا جس دوران ایک اور جنگجو کی لاش برآ مد کی گئی جس کی شناخت ضلع کمانڈر شیراز مولوی کے بطور ہوئی ہے وہ 2016سے سرگرم تھا۔

انسپکٹر جنرل آف پولیس کشمیر رینج وجے کمار نے ٹویٹر پر بتایا کہ ’کولگام میں حفاظتی عملے کے ساتھ تصادم میں مہلوکین کی شناخت ضلع کمانڈر شیراز مولوی اور یاور بٹ کے بطور ہوئی ہے‘۔وجے کمار نے بتایا کہ ’مذکورہ جنگجو کالعدم تنظیم حزب کے ساتھ وابستہ تھے اور وہ سیکورٹی فورسز پر حملوں، عام شہریوں کو تشدد کا نشانہ بنانے کی کارروائیوں اور دیگر تخریبی سرگرمیوں میں قانون نافذ کرنے والے ادارے کو انتہائی مطلوب تھے‘۔

خیال رہے کہ گذ شتہ شب ہی سری نگر کے بمنہ علاقے میں سیکورٹی فورسز اور جنگجوؤں کے درمیان مختصر تصادم میں ایک جنگجو ہلاک ہوا تھا۔پولیس ترجمان نے ٹویٹ کے ذریعے جانکاری فراہم کرتے ہوئے کہاکہ’جمعرات کی شام کوسرینگر کے بمنہ علاقے میں مختصر جھڑپ کے دوران ایک عدم شناخت ملی ٹینٹ ہلاک ہوا، جس کے قبضے سے ایک اے کے 47 رائفل اورگولہ بارود برآمد کرکے ضبط کیا گیا۔

جمعہ کے صبح پولیس نے ایک ٹویٹ کے ذریعے اس کی شناخت عامر ریاض ساکن کھر یو کے بطور ہوئی ہے جو غزوۃ الہند سے وابستہ تھا۔ ادھر پولیس کے انسپکٹر جنرل وجے کمار کا کہنا ہے کہ سری نگر کے بمنہ علاقے میں جمعرات کی شب ایک مختصر تصادم میں ہلاک ہونے والا جنگجو لیتہ پورہ حملے کے ایک ملزم کا رشتہ دار تھا۔

انہوں نے مہلوک جنگجو کی شناخت عامر ریاض ساکن کھریو پلوامہ کے طور پر کی جو مجاہدین غزوۃ الہند نامی تنظیم سے وابستہ تھا۔ان کا کہنا تھا کہ مہلوک جنگجو کو فدائین حملے انجام کی ذمہ داری سونپی گئی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں