کولگام میں پانچ جنگجوؤں کی ہلاکت سیکورٹی فورسز اور پولیس کیلئے بڑی کامیابی / آئی جی پی کشمیر

سرینگر:جنوبی ضلع کولگام کے پمبئی اور گوپال پورہ علاقوں میں سیکورٹی فورسز اور جنگجوؤں کے مابین ہوئی دو مسلح تصادم آرائیوں میں دو اعلیٰ کمانڈروں سمیت پانچ جنگجو جاں بحق ہو گئے ہیں۔ پولیس کے مطابق جھڑپوں میں جاں بحق ہوئے جنگجوؤں میں سے حزب ضلع کمانڈر شاکر نظیر جو کہ سال 2018سے سرگرم تھا جبکہ دوسرا ٹی آر ایف کمانڈر افاق سکندر تھا۔

سی این آئی کے مطابق کوگام کے پمبئی اور گوپال پورہ علاقوں میں سیکورٹی فورسز اور جنگجوؤں کے مابین دو مسلح تصادم آرائیاں ہوئی جس دوران دو اعلیٰ کمانڈروں سمیت پانچ جنگجو جاں بحق ہو گئے۔ پولیس نے دونو ں جھڑپوں میں پانچ جنگجوؤں کی ہلاکت کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ دونوں جھڑپوں میں مارے گئے جنگجوؤں میں سے دو اعلیٰ کمانڈر تھے جن میں سے ایک کا تعلق عسکری تنظیم حزب جبکہ دوسرا ٹی آر ایف کا تھا۔ آئی جی پی کشمیر وجے کمار نے ایک ٹویٹ میں لکھا کہ اعلیٰ جنگجو اور حزب کمانڈر شاکر نظیر جو سال 2018سے سرگرم تھا دو ساتھیوں سمیت پمبئی جھڑپ میں مارا گیا، جبکہ اس سے قبل پولیس نے ٹویٹ میں دعویٰ کیا تھا کہ گوپال پورہ جھڑپ میں ٹی آر ایف کمانڈر آفاق سکندر ہلاک ہو گیا۔

پولیس کے مطابق آفاق سکندر لون ولد محمد سکندر لون ساکنہ رے کرپرن شوپیان اور عرفان مشتاق لون ولد مشتاق احمد لون ساکنہ سید چیک آونیورہ گوپال پورہ جھڑپ میں مارے گئے۔ پولیس کے منطابق آفاق سکندر شہری ہلاکتوں پر فورسز پر حملوں میں ملوث تھا۔ انہوں نے کہا کہ پولیس ریکارڈ میں آفاق سکندر پولیس اہلکار نصیر احمد وگے کی ہلاکت میں ملوث تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس کے علاوہ سکندر غیر مقامی مزدور شنکر کمار کی ہلاکت میں ملوث تھا جبکہ انہوں نے کئی بار سیکورٹی فورسز کو نشانہ بنا کر گرینیڈ بھی داغے۔ اور ایس ایچ او منزگام پر بھی انہوں نے حملہ کیا جس میں چار پولیس اہلکار زخمی ہو گئے۔

اسی طرح سے پولیس نے پمبئی جھڑپ کے بارے میں بھی بیان جاری کرتے ہوئے بتایا کہ جھڑپ میں تین جنگجو مارے گئے جن میں سے ایک ضلع کمانڈر تھا۔انہوں نے بتایا کہ تینوں جنگجو کا تعلق حزب سے تھا اور شاکر نجار ساکنہ پونی پورہ کولگام ضلع کمانڈر کے بطور تھا جبکہ ان کے ہمراہ سیمر نجار ساکنہ کنی پورہ شوپیان بھی تھا اور تیسرے جنگجو کی ابھی تک شناخت نہ ہو سکی۔ انہوں نے بتایا کہ ابتدائی تحقیقات سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ تیسرے جنگجو کی شناخت اسلم ڈار حزب ضلع کمانڈر کے بطور ہوئی تاہم ابھی تک اس بارے میں مکمل تفصیلات مہیا نہیں ہو سکی اور ن کے ڈی این اے نمونے حاصل کئے گئے ہیں۔ شاکر نجار کے بارے میں بتایا جاتا ہے کہ و ہ اپریل سال 2018سے سرگرم تھا اور پولیس و سیکورٹی فورز کو انتہائی مطلوب تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں