عوام کی راحت رسانی اور بازآبادکاری کے لئے ٹھو س اقدامات اٹھائے جائیں: ڈاکٹر فاروق عبداللہ

سری نگر، جموں و کشمیر نیشنل کانفرنس کے صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ(رکن پارلیمان) نے جموں و کشمیر میں کئی مقامات پر بادل پھٹنے ،سیلابی ریلوں اور ژالہ باری کے نتیجے میں ہوئے مالی اور جانی نقصان پر نہایت رنج و الم اور دکھ کا اظہار کیا ہے اور حکومت پر زور دیا کہ ان لوگوں کی امدادکاری اور بازآبارکاری کیلئے فوری اقدامات اٹھائے جائیں انہوں نے موسم کی قہرسامانیوں سے کٹھوعہ میں 8افراد کے لقمہ اجل بن جانے پر زبردست صدمے کا اظہار کیااور حکومت سے زخمی ہوئے افراد کو بہتر سے بہتر علاج و معالجہ فراہم کرنے کے علاوہ مہلوکین کے لواحقین میں بھر پور ایکس گریشیا ریلیف فراہم کرنے کی بھی اپیل کی۔

انہوں نے حکومت پر زور دیا کہ جن کے مکانات سیلابی ریلوں کے نتیجے میں ڈھہ گئے یا جن کے مکانات اور رہائشیں ناقابل رہائش ہو گئے ہیں ایسے کنبوں کیلئے عارضی قیام و طعام کا بھی بندوبست کیا جائے اور ان کی فوری بازآبادکاری کیلئے جنگی بنیادوں پر اقدامات اٹھائے جائیں۔

انہوں نے سیلابی ریلوں سے منقطع ہوئے سڑکوں رابطوں اور منہدم ہوئے پلوں کی فوری مرمت کی جائے کیونکہ سڑک رابطوں کے ہونے سے ہی ریلف اور راحت کاری کے اقدامات ممکن ہوسکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایسے افراد کیلئے خصوصی مالی امداد کا اعلان کیا جانا چاہئے جن کے مال مویسی سیلابی ریلوں کی نذر ہوگئے ہیں۔

ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ ایسے افراد کی امدادکاری بھی ضروری ہے جن کی فصلوں اور میوہ باغات کو شدید ژالہ باری سے نقصان پہنچا ہے۔

یو این آئی- ارشید بٹ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں