جموں وکشمیر کی انتظامیہ نے 8محرم الحرام کے جلوس کو نکالنے کی اجازت دی : صوبائی کمشنر کشمیر

سری نگر،صوبائی کمشنر کشمیر وجے کمار بدھوری نے بدھ کے روز کہا کہ جموں وکشمیر انتظامیہ نے امسال 8محرم کے تاریخی جلوس کو نکالنے کی اجازت دی ہے۔

انہوں نے کہاکہ چونکہ جمعرات کے روز ورکنگ ڈے جس کے پیش نظر شیعہ تنظیموں کو صبح چھ بجے سے آٹھ بجے تک جلوس نکالنے کی اجازت دی گئی ہے۔

سری نگر میں نامہ نگاروں سے بات چیت کے دوران صوبائی کمشنر کشمیر وجے کمار بدھوری نے کہاکہ امسال 8محرم الحرام کے تاریخی جلوس جو شہید گنج سے ڈلگیٹ تک جاتا تھا کو نکالنے کی اجازت دی گئی ہے۔

انہوں نے کہاکہ لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کی ہدایت پر شیعہ برادری سے تعلق رکھنے والے لوگوں کو بدھ کے روز جلوس نکالنے کی اجازت دی گئی جس پر پچھلے تیس برسوں سے پابندی عائد کی گئی تھی۔

انہوں نے کہاکہ چونکہ جمعرات کے روز ورکنگ ڈے ہے جس کے پیش نظر لوگوں کو کسی قسم کی مشکل کا سامنا نہ کرناپڑے اسی لئے حکومت نے صبح چھ بجے سے آٹھ بجے تک جلوس نکالنے کی اجازت دی ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا یہ فیصلہ تاریخی ہے اور لوگوں کے جذبات و احساسات کو مد نظر رکھتے ہوئے لیا گیا۔

انہوں نے بتایا کہ صفائی ستھرائی کے لئے میونسپل کارپوریشن کو تحریری طورپر آگاہی فراہم کی گئی جبکہ ایمبولنس گاڑیوں کا بھی انتظامات کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ جس مقام پر جلوس اختتام پذیر ہوگاوہاں پر انتظامیہ نے شیعہ برادری کے لئے خصوصی گاڑیاں بھی رکھنے کا فیصلہ کیا تاکہ عزادار اپنے اپنے منزلوں کی اور واپس جا سکے۔

صوبائی کمشنر نے کہاکہ اگر کسی نے گڑھ بڑھ کی تواس کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

بتادیں کہ تین دہائیوں کے بعد جموں وکشمیر انتظامیہ نے شیعہ برادری کو تاریخی جلوس نکالنے کی اجازت دی ہے ۔

یو این آئی- ارشید بٹ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں