بچوں کا ٹیکنکل تعلیم کی طرف رجحان کافی بڑھ رہا ہے: کمشنر سکریٹری محکمہ ا سکل ڈیولپمنٹ

سری نگر، محکمہ سکل ڈیولپمنٹ کے کمشنر سکریٹری سوربھ بھگت کا کہنا ہے کہ بچوں کا فنی (ٹیکنکل) تعلیم کی طرف رجحان کافی بڑھ رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ امسال پالی ٹیکنک میں ساڑھے تیرہ ہزار سیٹوں کے لئے پچاس ہزار بچوں نے درخواستیں جمع کی تھیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ہماری صنعتیں تب ہی مستحکم ہوں گی جب ہمارے بچے تربیت یافتہ ہوں گے۔موصوف کمشنر سکریٹری نے ان باتوں کا اظہار بدھ کے روز یہاں نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرنے کے دوران کیا۔

انہوں نے کہا: ‘خوشی کی بات ہے کہ پالی ٹیکنک میں لگ بھگ ساڑے تیرہ ہزار سیٹوں کے لئے پچاس ہزار بچوں نے درخواستیں جمع کی تھیں اور ہمارے بچوں میں ٹیکنکل تعلیم کا رجحان بڑھ رہا ہے’۔

ان کا کہنا تھا کہ ان ڈگریوں سے بچوں کو روزگار حاصل کرنے کے زیادہ مواقع ملتے ہیں۔مسٹر بھگت نے کہا کہ ہماری صنعتوں کی بنیاد تب ہی مضبوط ہوگی جب ہمارے بچے تریبت یافتہ ہوں گے۔

انہوں نے کہا: ‘ہم ہر سیکٹر میں سکل کونسل بنا رہے ہیں اور ہم ہر سیکٹر کے صنعت کاروں کو دعوت دے رہے ہیں تاکہ ہمیں یہ معلوم ہو سکے کہ ان کو کس طرح کی تربیت کے بچوں کی ضرورت ہے’۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم ضرورت کے مطابق پالی ٹیکنک کالجوں کا سلیبس بھی ترتیب دے رہے ہیں۔کمشنر سکریٹری نے کہا کہ ہم زیادہ سے زیادہ روز گار کے مواقع پیدا کرنے پر زور دے رہے ہیں۔

انہوں نے کہا: ‘اس بات پر زور دیا جا رہا ہے کہ بچے ایسی ڈگریاں حاصل کریں جن کی مدد سے وہ اپنے کاروباری یونٹ قائم کر سکیں گے اور وہ سرکاری نوکری پر منحصر نہ رہ سکیں’۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کے سال 2030 تک ملک کو 5 ٹرلین اکانومی بنانے کے ہدف کو پورا کرنے کے لئے سکل ڈیولپمنٹ کا بڑا رول ہے۔

یو این آئی- ایم افضل

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں