ہم نے گذشتہ برسوں میں آئین میں درج مساوی حقوق کے مطابق خواتین کو با اختیار بنانے کو ترجیح دی: منوج سنہا

سری نگر، جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کا کہنا ہے کہ یونین ٹریٹری انتظامیہ نے گذشتہ برسوں میں آئین میں درج مساوی حقوق اور مساوی مواقع کے اصولوں کی بنیاد پر خواتین کو با اختیار بنانے کو ترجیح دی ہے۔

انہوں نے کہا کہ مجھے یہ کہتے ہوئے فخر محسوس ہو رہا ہے کہ ہماری آبادی کے نصف حصے نے یونین ٹریٹری کی ترقی و خوشحالی کے بہت بڑا رول ادا کیا۔

موصوف لیفٹیننٹ گورنر نے جمعرات کو یہاں بادامی باغ فوجی چھائونی میں مختلف شعبوں میں کامیابی حاصل کرنے والی کشمیر کی 25 خواتین کو اعزاز سے نوازا۔

فوج کی چنار کور نے ‘ایکس’ پر ایک پوسٹ میں کہا: ‘عزت مآب لیفٹیننٹ گورنر جموں و کشمیر منوج سنہا نے بادامی باغ چھائونی میں کامیابی حاصل کرنے والی کشمیر کی 25 خواتین کو اعزاز سے نوازا جنہوں نے قوم کی تعمیر کے لئے معاشرے میں اپنا روال ادا کیا ہے اور دوسری خواتین کے لئے ایک رول ماڈل بن گئی ہیں’۔

منوج سنہا نے ‘ایکس’ پر اپنے ایک پوسٹ میں کہا: ‘کشمیر کی کامیابی حاصل کرنے والی خواتین کو نوزانا میرے لئے باعث اعزاز ہے جنہوں نے اپنے لئے ایک مخصوص جگہ بنائی ہے اور دوسری خواتین کو مختلف شعبوں میں کامیابی کی نئی بلندیوں کو حاصل کرنے کے خواب دیکھنے اور ان کو حاصل کرنے کی ترغیب دی ہے’۔

انہوں نے کہا کہ ناری شکتی کو با اختیار بنانے کے لئے یہ چنار کور کا ایک قابل تعریف اقدام ہے۔

موصوف لیفٹیننٹ گورنر نے اپنے ایک اور پوسٹ میں کہا کہ یونین ٹریٹری انتظامیہ نے گذشتہ برسوں میں آئین میں درج مساوی حقوق اور مساوی مواقع کے اصولوں کی بنیاد پر خواتین کو با اختیار بنانے کو ترجیح دی ہے۔

انہوں نے کہا: ‘ مجھے یہ کہتے ہوئے فخر محسوس ہو رہا ہے کہ ہماری آبادی کے نصف نےت یونین ٹریٹری کی ترقی و خوشحالی کے بہت بڑا رول ادا کیا’۔

یو این آئی- ایم افضل

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں