کشمیر میں کرسمس کا مقدس تہوار تزک و احتشام سے منایا گیا

سری نگر، دنیا بھر کی طرح وادی کشمیر میں بھی خشک موسم مگر ٹھٹھرتی سردیوں کے بیچ پیر کے روز مسیحی برا دری کا پُر مسرت تہوار کرسمس انتہائی تزک و احتشام اور مذہبی عقیدت و احترام سے منایا گیا۔اس سلسلے میں یہاں مولانا آزاد روڈ پر واقع ہولی فیملی کیتھولک چرچ میں سب سے بڑی تقریب منعقد ہوئی جس میں عقیدت مندوں کی۔وادی میں گرجا گروں کو اس مقع کی مناسبت سے سجایا سنوارا گیا تھا۔

ذرائع کے مطابق وادی میں بھی پیرکے روز کرسمس کے موقع پر حسب معمول تقاریب کا انعقاد ہوا اور اس سلسلے میں سب سے بڑی تقریب مولانا آزاد روڑ پر واقع ہولی فیملی کیتھولک چرچ میں منعقد ہوئی جس میں عقیدت مندوں کی اچھی خاصی تعداد نے شرکت کی۔

اس موقع پر مذہبی رسومات کی ادائیگی کے ساتھ ساتھ وادی میں امن وامان کی بحالی اور خوشحالی کے لئے دعائیں بھی مانگی گئیں اور لوگوں میں مٹھائیاں بھی تقسیم کی گئیں۔ایک عقیدت مند نے بتایا: ‘ہم نے آج اس مقدس موقع پر دنیا بھر خاص طور پر کشمیر کے لئے امن اور ترقی کی دعا کی۔انہوں نے کہا: ‘یہاں مقامی لوگوں کے علاوہ ملک کے مختلف حصوں کے لوگ موجود ہیں جو ہمارے اتحاد کا ایک مظہر ہے’۔ان کا کہنا تھا کہ کشمیر کے لوگ یہاں چرچ کی خود آرائش او زیبائش کرتے ہیں جو اس بات کا ثبوت ہے کہ یہاں مذہبی بھائی چار قائم و دائم ہے۔

وادی کے مشہور زمانہ سیاحتی مقام گلمرگ میں بھی کرسمس کا تہوار انتہائی جوش وخروش سے منایا گیا جہاں اس مقدس تہوار سے قبل ہی غیر مقامی سیاحوں کی بڑی تعداد پہنچ گئی تھی۔وادی کے ساتھ ساتھ جموں میں بھی کرسمس کا تہوار احتشام سے منایا گیا۔

ذرائع نے بتایا کہ جموں میں بھی کرسمس تہوار کے پیش نظر تمام گرجا گھروں کو سجایا سنوارا گیا تھا اور ان میں صبح سے ہی عقیدت مندوں کا تانتا بندھا رہا۔بتادیں کہ کرسمس کا تہوار دنیا بھر میں 25 دسمبر کو انتہائی تزک و احتشام کے ساتھ منایا جاتا ہے۔ یہ تہوار عیسیٰ مسیح کی یوم پیدائش کے طور پر منایا جاتا ہے۔

یو این آئی ایم افضل

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں