ڈاکٹر فاروق عبداللہ کیخلاف بھاجپا جنرل سکریٹری کا بیان ذہنی اختراع : نیشنل کانفرنس

سری نگر،نیشنل کانفرنس نے بھاجپا کے قومی جنرل سکریٹری ترون چُگ کی طرف سے حالیہ بیان میں صدرِ نیشنل کانفرنس ڈاکٹر فاروق عبداللہ کیخلاف استعمال کئے گئے ریمارکس کو موصوف کا ذہنی اختراع اور بھاجپا کی بوکھلاہٹ قرار دیاہے۔

پارٹی کے ریاستی ترجمان عمران نبی ڈار نے چُگ کے بیان پر شدید ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ موصوف صرف نام کے قومی جنرل سکریٹری ہے جبکہ ان کا اصلی کام نیشنل کانفرنس اور اس کی قیادت کیخلاف بیان بازی کرنا ہے ، اسی لئے موصوف آئے روز نیشنل کانفرنس کیخلاف بیانات جاری کرتے رہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جموں وکشمیر میں متعدد لوگوں کی روزی روٹی نیشنل کانفرنس کی مخالفت پر منحصر ہے اور ترون چُگ بھی انہی لوگوں میں شامل ہیں۔ نیشنل کانفرنس کی مخالفت کرنے سے نہ صرف ان لوگوں کی روزی روٹی کا بندوبست ہوتا ہے بلکہ انہیں سیکورٹی اور دیگر پروٹوکول بھی آسانی سے مل جاتا ہے۔

ترجمان نے کہاکہ شیر کشمیر کی گرفتاری اور اس بارے میں ڈاکٹر فاروق عبداللہ کے بیان کو اگرچہ توڑ مروڑ کر پیش کیاگیا لیکن بھاجپا کو شیر کشمیر شیخ محمد عبداللہ کی گرفتاری سے کوئی لینا دینا نہیں بلکہ یہ لوگ صرف اس لئے تلملا اُٹھے ہیں کیونکہ صدرِ نیشنل کانفرنس نے مذکورہ تقریر میں ملک کی ترقی کیلئے آنجہانی نہرو کی کوششوں کو سراہا ہے۔

ترجمان نے کہا کہ نیشنل کانفرنس اور اس کی قیادت اگر اقتدار کی لالچی ہوتی تو ڈاکٹر فاروق نہرو کی تعریف نہیں کرتے بلکہ بی جے پی کی اے، بی اور سی ٹیم کی طرح بھاجپا اور اس کی قیادت کے گُن گاتے پھر رہے ہوتے۔

یو این آئی، ارشید بٹ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں