پاکستان ہیپاٹائٹس کے خاتمے کے لیے پرعزم : علوی

اسلام آباد، پاکستان کے صدر عارف علوی نے جمعہ کو کہا کہ ان کا ملک لوگوں کی بہتری کے لیے ہیپاٹائٹس کی روک تھام، کنٹرول اور خاتمے کو قومی ترجیح بنانے کے لیے پرعزم ہے۔

ہیپاٹائٹس کے عالمی دن پر اپنے پیغام میں صدر نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ ہیپاٹائٹس سی کے دنیا میں سب سے زیادہ متاثرین پاکستان میں ہیں جہاں اس وقت ایک کروڑ سے زائد مریض اس مرض میں مبتلا ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پوری آبادی کی فعال جانچ اور مثبت پائے جانے والوں کے فوری علاج کی ضرورت ہے۔

مسٹر علوی نے کہا کہ بروقت کارروائی کے بغیر، پاکستان میں ہیپاٹائٹس کے کیسز کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہوسکتا ہے، جس سے جگر کے کینسر کی تباہ کن وبا پھیل سکتی ہے۔ اس کے نتائج تشویشناک ہوں گے، جن میں بہت سی اموات، جگر کے سیروسس کے کیسز اور ملکی معیشت پر بہت بڑا بوجھ پڑھنا شامل ہے۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت اس بیماری پر قابو پانے کے لیے پرعزم ہے اور حالیہ برسوں میں ملک کے صحت مند اور خوشحال مستقبل کو محفوظ بنانے کے لیے خصوصی اقدامات کر رہی ہے۔ ہم ملک بھر میں احتیاطی مداخلتوں پر زور دیتے ہوئے اسکریننگ، جانچ اور علاج کی کوششوں کو بڑھا رہے ہیں۔ ہمیں بیماری کے خطرے کے عوامل کو فوری طور پر حل کرنا چاہیے، جیسے خون کی محفوظ منتقلی کو یقینی بنانا، خودکار طور پر غیر فعال سرنجوں کا استعمال، اور صحت کی دیکھ بھال سیٹنگس میں سخت میں انفیکشن کنٹرول کے طریقوں کو شامل کرنا ہوگا‘‘۔

یو این آئی۔ این یو۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں