پاکستان میں فٹبال کھلاڑیوں کے اغوا میں ملوث سات مشتبہ افراد گرفتار

کوئٹہ، سیکورٹی فورسز نے پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے شہر ڈیرہ بگتی میں چھ فٹ بال کھلاڑیوں کے اغوا کے سلسلے میں سات مشتبہ افراد کو گرفتار کیا ہے۔

پاکستان کے قائم مقام وزیر داخلہ سرفراز بگتی اور بلوچستان کے وزیر داخلہ ریٹائرڈ کیپٹن زبیر احمد جمالی نے متعلقہ حکام کو مغوی فٹبالرز کی فوری بازیابی کے لیے سرچ آپریشن شروع کرنے کی ہدایت کی تھی۔ علاقے میں بڑے پیمانے پر سرچ آپریشن جاری ہے۔ سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو محاصرے میں لے لیا ہے اور سات مشتبہ افراد کو پوچھ گچھ کے لیے حراست میں لے لیا ہے۔

مسٹر بگتی نے یقین دلایا کہ مغوی کھلاڑیوں کو جلد بازیاب کرالیا جائے گا اور تمام سیکیورٹی اداروں کو ہدایت کی کہ وہ تمام دستیاب وسائل کو بروئے کار لاتے ہوئے ان کی بحفاظت واپسی کو یقینی بنائیں۔ معصوم فٹبال کھلاڑیوں کے اغوا میں ملوث افراد کو بخشا نہیں جائے گا۔

حکام نے بتایا کہ سیکیورٹی فورسز سندھ اور پنجاب کی سرحد سے متصل علاقوں میں تلاشی لے رہی ہیں۔ مغوی کھلاڑیوں کی بازیابی کے لیے ہر ممکن کوشش کی جا رہی ہے۔

واضح رہے کہ اتوار کو ضلع ڈیرہ بگتی کی تحصیل سوئی کے علاقے کچھی کینال میں 24 کھلاڑی آل پاکستان چیف منسٹر گولڈ کپ فٹبال ٹورنامنٹ کے کوالیفائنگ راؤنڈ میں شرکت کے لیے سبی جارہے تھے کہ اسی دوران نامعلوم مسلح افراد نے ان کی گاڑی کو روک لیا اور بندوق کی نوک پر انہیں اپنے ساتھ لے گئے۔ بعد ازاں 18 کھلاڑیوں کو رہا کر دیا گیا جبکہ چھ کو اپنے ساتھ رکھا گیا۔ تمام کھلاڑیوں کا تعلق ڈیرہ بگتی اور سوئی کے علاقوں سے ہے۔

یو این آئی۔ این یو۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں