بلوچستان میں خودکش حملے میں 11 افراد زخمی

اسلام آباد، پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں جمعرات کو ایک خودکش حملے میں ایک مذہبی سیاسی جماعت کے رہنما سمیت گیارہ افراد زخمی ہو گئے۔

پولیس نے آج یہاں میڈیا کو بتایا کہ یہ خودکش حملہ اس وقت کیا گیا جب جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی) کے ایک رہنما، جو ضلع قلات میں ایک سیاسی ریلی میں شرکت کے لیے جا رہے تھے، مستونگ ضلع سے گزر رہے تھے۔

مستونگ پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ ابتدائی اطلاعات کے مطابق رہنما حافظ حمد اللہ کی گاڑی کو خودکش بمبار نے نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا کہ مشتبہ حملہ آور نے بارود سے بھری موٹر سائیکل کو ضلع کی ایک مرکزی شاہراہ پر لیڈر کی گاڑی سے ٹکرا دیا۔

جے یو آئی کے ترجمان اسلم غوری کا کہنا تھا کہ حملے میں رہنما اور ان کے دو سیکیورٹی اہلکار زخمی ہوئے ہیں جنہیں قریبی اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسٹر حمد اللہ کو معمولی چوٹیں آئی ہیں، ان کی حالت مستحکم ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ واقعہ کے وقت ایک مسافر وین حمد اللہ کی گاڑی کے قریب سے گزر رہی تھی اور دھماکے کی زد میں آکر 8 مسافر زخمی بھی ہوئے۔

ابھی تک کسی گروپ نے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔ تحقیقات کے لیے علاقے کو گھیرے میں لے لیا گیا ہے۔

یواین آئی۔اسپوٹنک۔ ظ ا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں