تہران مخالف الزامات پر ایران نے جرمن سفیر کو کیا طلب

تہران، ایران کی وزارت خارجہ نے بدھ کے روز جرمنی کی ایک عدالت میں تہران کے خلاف لگائے گئے بے بنیاد الزامات پر تہران میں جرمنی کے سفیر ہانس اودو موزیل کو طلب کیا۔ ژنہوا نے جمعرات کو یہ اطلاع دی۔

ایران کی وزارت خارجہ نے کہا کہ وزارت کے مغربی یورپ کے شعبہ کے سربراہ ماجد نیلی احمدی نے بھی جرمنی میں ایک یہودی عبادت گاہ میں آگ زنی کی مبینہ سازش کے تعلق سے برلن میں ایرانی ناظم الامور کو طلب کرنے کے خلاف احتجاج کیا۔

میٹنگ کے دوران جرمن سفیر کو یاد دلایا گیا کہ بقائے باہمی کے اصول کو فروغ دینے میں ایران کا بہت ہی شاندار ٹریک ریکارڈ ہے کیونکہ اسلام اور ایرانی ثقافت میں ابراہیمی مذاہب کا احترام کرنے کا ایک قابل قدر درجہ ہے۔

مسٹر موزیل نے کہا کہ وہ ایران کے احتجاج کو جلد از جلد برلن تک پہنچائیں گے۔ منگل کو ایک بیان میں جرمن وزارت خارجہ نے کہا کہ اس نے مبینہ آتش زنی کی سازش کے الزام میں ایرانی رہنما کو طلب کیا ہے۔

اس سے پہلے دن میں، ڈسلڈورف کی اعلیٰ علاقائی عدالت نے نومبر 2022 میں مغربی شہر بوخم میں عبادت گاہ پر حملے کی منصوبہ بندی کرنے کے لئے ایک جرمن-ایرانی شہری کو مجرم قرار دیا اور اسے 33 ماہ قید کی سزا سنائی، اور یہ دعویٰ کیا کہ سازش ایرانی ایجنسیوں سے جڑی تھی۔

یو این آئی۔ این یو۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں