جنوبی لبنان میں اسرائیلی حملے میں دو امدادی کارکن جاں بحق اور ایک ایمبولینس تباہ

بیروت، مسلح گروپ حزب اللہ سے وابستہ ریسکیو فورس کے مطابق جمعرات کو جنوبی لبنان میں ایک شہری دفاع کے مرکز پر اسرائیلی حملے میں دو امدادی کارکن جاں بحق اور ایک ایمبولینس تباہ ہو گئی۔

العربیہ کے مطابق اسلامک ہیلتھ اتھارٹی کے شہری دفاع کے آپریشنز روم نے کہا کہ “حنین قصبے میں ایک ہنگامی مرکز پر براہِ راست اسرائیلی بمباری” میں یونٹ کے دو مرد ارکان جاں بحق ہو گئے۔
اسرائیلی فوج کی جانب سے فوری طور پر کوئی تبصرہ نہیں کیا گیا۔

سرحد پار سے ہونے والی گولہ باری کے تین ماہ سے زیادہ عرصے میں یہ پہلا موقع تھا جب کسی ہنگامی مرکز پر اسرائیلی حملہ ہوا۔ دیگر واقعات میں امدادی کارکن اور طبی عملے اسرائیلی بمباری میں زخمی ہوئے ہیں جب انہوں نے سابقہ حملے کے مقام تک پہنچنے یا لاشیں نکالنے کی کوشش کی۔

ان سے جنوبی لبنان پر اسرائیلی گولہ باری میں جاں بحق ہونے والے شہریوں کی تعداد 25 ہو گئی ہے جن میں بچے اور صحافی بھی شامل ہیں۔

وہاں حزب اللہ کے کم از کم 140 ارکان بھی جاں بحق ہوئے ہیں اور سرحد کی اسرائیلی جانب نو فوجی بھی مارے گئے ہیں۔

حزب اللہ نے جمعرات کو اسرائیل پر سرحد پار سے راکٹ داغے جبکہ امریکی خصوصی ایلچی آموس ہوچسٹین نے لبنان اور اسرائیل کے درمیان متنازع سرحد پر کشیدگی کو ٹھنڈا کرنے کی کوشش میں بیروت میں لبنانی حکام سے ملاقات کی

یواین آئی۔ م س

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں