روس نے طیارہ مار گرائے جانے کے بعد سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس طلب کر لیا

اقوام متحدہ، روس کے وزیر خارجہ سرگئی لاو¿روف نے بدھ کو کہا کہ روس نے یوکرین کے فوجیوں کو لے جانے والے روسی طیارے کو مار گرائے جانے کے بعد اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس بلایا ہے۔

نیویارک میں اقوام متحدہ کے ہیڈکوارٹر میں ایک نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے، مسٹر لاو¿روف نے کہا کہ ماسکو نے نیویارک کے وقت کے مطابق سہ پہر 3 بجے میٹنگ منعقد کرنے کی درخواست کی تھی، لیکن بظاہر اس کے مطابق میٹنگ طے نہیں کی گئی ۔

مسٹر لاو¿روف نے کہا کہ ایک روسی Il-76 ٹرانسپورٹ طیارہ مار گرایا گیا جس میں 65 گرفتار یوکرین کے فوجی اہلکار سوار تھے جن میں تین روسی افسران اور عملے کے چھ ارکان شامل تھے۔ طیارے میں سوار تمام افراد یوکرین کے دہشت گردانہ حملے میں مارے گئے۔

مسٹر لاو¿روف نے کہا کہ یوکرین کی طرف سے خارکیف کے علاقے سے داغے گئے ایک فضائی دفاعی میزائل نے طیارے کو بیلگوروڈ کے علاقے میں مار گرایا۔ روس اور یوکرین کے درمیان معاہدہ طے پانے کے بعد’ آئی ایل- 76‘ جنگی قیدیوں کے تبادلے کے لیے 65 مغوی یوکرینی فوجیوں کو ماسکو سے بیلگوروڈ لے جا رہا تھا۔

یواین آئی، م ش

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں